fbpx

نجی میڈیکل کالجزکی جانب سے غریب طالبات کے جذبات پر کاری ضرب

لاہور(نیٹ نیوز)غریب کا ڈاکٹر بننا مشکل ، نجی میڈیکل کالجزکی جانب سے غریب طلبہ کے جذبات پر کاری ضرب۔داخلے کے لیے 50 لاکھ روپے کی بینک سٹیٹمنٹ کی شرط رکھ دی۔50لاکھ روپے نہ رکھنے والے طلبہ کو کالجوں سے نکالا جانے لگا۔ نجی میڈیکل کالجز نے پی ایم ڈی سی سے منظور کروایا کہ کچھ طالب علم ایک دو سال بعد چھوڑ جاتے ہیں جس کے باعث سیٹ اور بجٹ دونوں متاثر ہوتے ہیں اور کالج کو نقصان کا سامنا کرنا پڑتا ہے تاہم جو بچہ داخلہ لے گا وہ پہلے 50 لاکھ روپے کی بینک سٹیٹمنٹ جمع کروائے گا۔ اس شرط پر طلبہ نے مطالبہ کیا کہ سالانہ فیس 10لاکھ روپے ہے،صرف فیس وصول کی جائے۔

یہ بھی چیک کریں

نمک کا کم استعمال اچھی صحت کا ضامن

شازیہ انوار نمک کے بنا کھانوں کو بے ذائقہ ہی تصور کیا جاتا ہے کیونکہ …