کیا ٹھنڈے پانی میں تیراکی ڈیمینشیا کاخطرہ کم کرسکتی ہے؟

کیا ٹھنڈے پانی میں تیراکی ڈیمینشیا کاخطرہ کم کرسکتی ہے؟

کیمبرج یونیورسٹی کے محققین کا کہنا ہے کہ ٹھنڈے پانی میں تیراکی دماغ کو ڈیمینشیا جیسی پیچیدہ بیماریوں سے محفوظ بناسکتی ہے۔

دنیا میں پہلی مرتبہ لندن پارلیمینٹ ہل لیڈو کے باقاعدگی سے تیراکی کرنے والے تیراکوں کے خون میں ’’کولڈ شاک ‘‘پروٹین پایا گیا ہے۔

یہ پروٹین ڈیمنشیا کے خطرے کو کم کرتا ہے۔

یوکے ڈیمینشیا ریسرچ انسیٹیوٹ سینٹر کے سربراہ پروفیسرجیووانا ملوسی کا کہنا ہے کہ یہ دریافت نئی دواؤں کی طرف ایک قدم ہے جو ڈیمینشیا کے مرض کو روکنے میں مدد فراہم کرے گا۔

یہ تحقیق اگرچہ حوصلہ افزا ہے لیکن یہ ابھی ابتدائی مرحلے میں ہے تاہم اس میں ہائبرنیشن صلاحیت تمام ممالیا جانوروں کو برقرار رکھے ہوئے ہے جو سردی میں ظاہر ہوتے ہیں۔

واضح رہے کہ صرف برطانیہ میں ہی دس لاکھ سے زائد افراد ڈیمینشیا کا شکار ہیں اور اندیشہ ظاہر کیا جا رہا ہے کہ 2050 تک یہ تعداد دگنی ہوجائے گی۔

یہی وجہ ہے کہ محققین اس مرض کی روک تھام کے لیے نت نئے طریقے دریافت کررہے ہیں۔

یہ بھی پڑھیں

گوشت نہیں کھائیں گے، تو ہڈی تڑوا بیٹھیں گے!

گوشت نہیں کھائیں گے، تو ہڈی تڑوا بیٹھیں گے!

(میڈیا92نیوز) اگر آپ گوشت کھانا بالکل ترک کردیں گے تو اس سے ہڈیاں نرم پڑسکتی …