پولیس فورس میں خواتین کی نمائندگی کم کیوں؟

پولیس فورس میں خواتین کی نمائندگی کم کیوں؟

لاہور: برصغیر میں پولیس کے نظام کا تاریخی جائزہ لیا جائے تو مغلیہ عہد میں یہاں پولیسنگ موجود تھی، لیکن انگریز نے جب یہاں قبضہ کیا تو ہر قابض کی نفسیات کے مطابق اس نے دیگر چیزوں کے ساتھ پولیس کا نظام بھی بدل ڈالا۔

برطانوی سامراج نے مجسٹریٹی نظام متعارف کروایا، جس کے مطابق داروغہ اور دیگر ماتحت افسروں کو پولیسنگ کے لئے بھرتی کیا گیا۔ انگریزحاکم نے اپنے مخصوص مقاصد کے حصول کے لئے پولیسنگ کا جدید نظام متعارف کروایا تاکہ وہ مقامی افراد پر اپنا کنٹرول برقرار رکھ سکے، لیکن افسوس! انگریز کا بنایا نظام آزادی کے بعد نہ صرف ابھی تک اسی طرح چل رہا ہے، بلکہ اس نظام کو چلانے کے ’’مخصوص‘‘ مقاصد بھی نہیں بدلے، یعنی آج بھی حکمران اور دیگر بااثر طبقات پولیس کو اپنے مخصوص مقاصد کے لئے استعمال کر رہے ہیں، جس کا نتیجہ پھر ادارے کی تباہی کی صورت میں برآمد ہو رہا ہے۔

یہ بھی پڑھیں

پاکستانی نژاد جرمن سائنسداں میکس پلانک سوسائٹی کی نائب صدر منتخب

پاکستانی نژاد جرمن سائنسداں میکس پلانک سوسائٹی کی نائب صدر منتخب

(میڈیا92نیوز) پاکستانی نژاد جرمن ماہرِ جینیات آصفہ اختر کو جرمنی کی مشہور میکس پلانک یونیورسٹی …