مالی مسائل سے پولیس اہلکاروں میں ڈپریشن بڑھنے لگا

مالی مسائل سے پولیس اہلکاروں میں ڈپریشن بڑھنے لگا

لاہور(میڈیا92نیوز) پو لیس ملازمین کی تنخواہوں،اعلی افسران کا ناروارویہ ،چھٹی اور دیگرمالی مسائل فوری حل نہ کرنے کی وجہ سے ڈپریشن بڑھنے لگا،آئی جی پنجاب نے ذہنی بیمار اور انتہا پسند اہلکاروں کو اسلحہ ڈیوٹی روک کر نفسیاتی علاج کرانے کا حکم جاری کر دیا،اہلکارذہنی پریشانی کی وجہ سے خودکشیاں اورساتھی ملازمین کوفائرنگ کانشانہ بنانے لگے ہیں جبکہ غیر ضروری نفسیاتی دباؤ کی وجہ سے تھانوں میں متعین سٹاف کا عوام سے نارواسلوک پولیس کی جانب سے اصلاحاتی نظام میں بھی رکاوٹ ہے۔ با وثوق ذرا ئع کے مطابق آ ئی جی پنجا ب کو ایک رپو رٹ مو صول ہو ئی جس میں انکشا ف کیا گیا کہ پولیس کے اعلی افسران کاچھوٹے ملازمین کومسائل پرتوجہ نہ دینے اورناروا روئیے کی وجہ سے اہلکاروں میں ذہنی انتہاپسندی اورشدت پسندی بڑھنے لگی ہے جس کی وجہ سے ایسے اہلکاروں کی جانب سے اسلحہ کے غلط استعمال سے قیمتی جانوں کا ضیاع ہونے لگاہے۔اسی حوالے سے آئی جی پنجاب نے صوبہ بھر میں ذہنی بیمار اورشدت پسنداہلکاروں سے اسلحہ ڈیوٹی سے روک دیاہے۔ذرا ئع کا مزید کہنا ہے کہ آ ئی جی پنجا ب نے تما م آ ر پی اوز اور ڈی پی اوز کو احکا ما ت جا ری کئے ہیں کہ افسران کی جانب سے ملازمین کے تنخواہوں۔چھٹی سمیت دیگرمالی مسائل فوری حل نہ کرنے کی وجہ سے ڈپریشن بڑھ رہا ہے۔افسران ملازمین کے مسائل پرخصوصی توجہ دے کرملازمین کے ساتھ ربطے میں رہیں۔اسی حوالے سے اہلکاروں کی صوبہ بھرمیں نفسیا تی علا ج (سائیکلوجیکل پروفائلنگ) بھی کرانے کا حکم دیا اور کہا گیا کہ ایسے ذہنی انتہاپسنداورشدت پسند اہلکاروں کی فہرستیں بناکرآپریشنز اور اسٹیبلشمنٹ برانچ کوبھجوائی جائیں۔آئندہ کسی اہلکار نے کوئی انتہائی اقدام اٹھایا تو کاروائی اعلی افسر کے خلاف بھی ہوگی۔

یہ بھی پڑھیں

سال 2020 میں لاکھوں افراد موسمیاتی شدت کی باعث نقل مکانی پرمجبور،رپورٹ

سال 2020 میں لاکھوں افراد موسمیاتی شدت کی باعث نقل مکانی پرمجبور،رپورٹ

(میڈیا92نیوز)پاکستان میں ٹڈی دل کا حملہ ہوا اور کراچی سمیت ملک کے کئی علاقوں میں …