ایسے ڈائیلاگ کی کیا حیثیت جس میں حکومت نہ ہو: شیخ رشید

ایسے ڈائیلاگ کی کیا حیثیت جس میں حکومت نہ ہو: شیخ رشید

لاہور: وزیر ریلوے شیخ رشید نے کہا ہے کہ مذاکرات اور ڈائیلاگ کا سلسلہ شروع ہوگا لیکن اس ڈائیلاگ کی کیا حیثیت ہوگی جس میں حکومت نہیں ہوگی۔

لاہور میں پریس کانفرنس کرتے ہوئے شیخ رشید نے کہا کہ گلگت بلتستان میں الیکشن آزاد امیدواروں نے جیتا ہے کیونکہ ووٹ بینک کے حساب سے بھی آزاد امیدوار جیتے ہیں۔

انہوں نے کہا کہ یہ قوم کو بند گلی میں لے کر جارہے ہیں، نوازشریف اور مریم نواز نے بیان دے کر عمران خان کی خدمت کی ہے، امید ہے سیاست کا جنازہ نہیں نکلے گا۔

شیخ رشید کا کہنا تھا کہ خدا اپوزیشن کو عقل و شعور دے کہ وہ تیزی سے مذاکرات کی طرف آئیں، مذاکرات اور ڈائیلاگ کا سلسلہ شروع ہوگا، حکومت سمیت اور حکومت کے ساتھ، اس ڈائیلاگ کی کیا حیثیت ہوگی جس میں حکومت نہیں ہوگی۔

وزیر ریلوے نے مزید کہا کہ نیب اور این آر او کیسز سے ہٹ کر عمران خان ہر ایک سے بات چیت کے لیے تیار ہے، جب سیاسی لوگ سیاسی لوگوں سے بات چیت نہیں کرتے تو سیاست کا جنازہ نکلتا ہے اور مجھے امید ہے اس ملک میں سیاست کا جنازہ نہیں نکلے گا۔

ان کا کہنا تھا کہ جنرل باجوہ نے ایک نہیں چار مرتبہ کہا جس کی بھی حکومت ہوگی فوج اس کے ساتھ کھڑی ہوگی، کوئی بھی عقل کا اندھا یہ نہ سوچے کہ پاکستان کی عظیم فوج کو ملک کے کسی مسئلے سے الگ کیا جاسکتا ہے، فوج میں بڑا تحمل ہے، وہ اپوزیشن کی طرح بے وقوف اور جذباتی نہیں۔

یہ بھی پڑھیں

کورونا سے بچاؤ کےلیے مہنگا ماسک، قیمت 15 لاکھ روپے!

کورونا سے بچاؤ کےلیے مہنگا ماسک، قیمت 15 لاکھ روپے!

(میڈیا92نیوز)جاپان کی ایک کمپنی نے کورونا وائرس سے بچنے کےلیے بہت ہی خاص قسم کا …