سپریم کورٹ نے 6، 6 بار سزائے موت کے دو ملزمان کو بری کر دیا

سپریم کورٹ نے 6، 6 بار سزائے موت کے دو ملزمان کو بری کر دیا

اسلام آباد: سپریم کورٹ نے چھ چھ بار سزائے موت کے 2 ملزمان کو عدم شواہد کی بنا پر بری کر دیا۔

ملزمان شاہ مور اور نور خان پر سوئی ڈیرہ بگٹی میں 2 لوگوں کے قتل کا الزام تھا اور ٹرائل کورٹ نے دونوں ملزمان کو چھ چھ بار سزائے موت سنائی تھی۔

بلوچستان ہائی کورٹ نے بھی ٹرائل کورٹ کی سزا کے فیصلے کو برقرار رکھا تھا۔ دونوں ملزمان نے بلوچستان ہائی کورٹ کے فیصلے کو سپریم کورٹ میں چیلنج کر رکھا تھا۔

سپریم کورٹ کے جسٹس منظور ملک کی سربراہی میں 2 رکنی بینچ نے کیس سماعت کی۔

وکیل ملزمان لطیف کھوسہ کا کہنا ہے کہ دونوں ملزمان پر 2014 میں قتل کرنے کا الزام تھا، بعد میں چشم دید گواہ اپنے بیان سے مکر گئے۔

لطیف کھوسہ کا کہنا تھا کہ مقتولین کا ڈیتھ سرٹیفکیٹ وقوعہ کے 2 دن بعد بنایا گیا اور مقدمہ 4 دن بعد درج کیا گیا، وقوعہ 9 اگست 2014 کو پیش آیا اور مقدمہ 12 اگست کو درج کیا گیا۔

وکیل ملزمان نے کہا کہ واقعے کا کوئی بھی چشم دید گواہ نہیں لہذا ملزمان پر جرم ثابت نہیں ہوتا۔

سپریم کورٹ نے بلوچستان ہائی کورٹ کا فیصلہ کالعدم قرار دیتے ہوئے عدم شواہد کی بنا پر دونوں ملزمان کو رہا کرنے کا حکم دے دیا۔

یہ بھی پڑھیں

سال 2020 میں لاکھوں افراد موسمیاتی شدت کی باعث نقل مکانی پرمجبور،رپورٹ

سال 2020 میں لاکھوں افراد موسمیاتی شدت کی باعث نقل مکانی پرمجبور،رپورٹ

(میڈیا92نیوز)پاکستان میں ٹڈی دل کا حملہ ہوا اور کراچی سمیت ملک کے کئی علاقوں میں …