جانی نقصان سے بہتر ہے کہ میں بجلی نہ ہونے پر گالیاں کھا لوں

کراچی (میڈیا92نیوز) چئیرمین کے الیکٹرک اکرم سہگل کا کہنا ہے کہ جانی نقصان سے بہتر ہے کہ میں بجلی نہ ہونے پر گالیاں کھا لوں۔میڈیا رپورٹس میں بتایا گیا ہے کہ اکرم سہگل کا مزید کہنا ہے کہ کراچی میں ہونے والی بارشوں کے واقعات کی ذمہ داری ادارہ قبول کرتا ہے۔یہ صرف کے الیکڑک کا قصور نہیں،غیر قانونی کنڈے اور کیبل آپریٹرز بھی ذمہ دار ہیں۔
انٹرنیٹ کیبل والوں کو کیوں کھلی چھوٹ دی گئی ہے۔اس بات کو یقینی بنایا جائے کہ انٹرنیٹ کیبل بجلی کے کھمبوں میں نہ لگے ہوں۔انٹرنیٹ کیبل کا مکمل طور پر غیر قانونی ہے۔ انہوں نے مزید کہا کہ بارشوں کے دوران ہمارا عملہ بغیر چھٹی کے 72 گھنٹے تک کام کرتا رہا۔اسے بھی سراہنا چاہئیے۔اکرم سہگل نے کہا کہ کچرا،پانی جمع ہوتو بجلی بحال کرنے پر کرنٹ لگنے کا خدشہ ہوتا ہے۔
جاںوں کو خطرے سے بہتر ہے کہ میں بلی نہ ہونے پر گالیاں کھا لوں۔خیال رہے کہ گزشتہ ایک ماہ سے ملک بھر میں بارشوں کا جو سلسلہ جاری ہے وہ تھمنے کا نام ہی نہیں لے رہا اور کہیں کہیں تو بارش رحمت کی بجائے زحمت بھی بن چکی ہے۔جس میں سرفہرست کراچی شہر ہے کیونکہ وہاں نکاسی آب کا معاملہ ایسا خراب ہوا ہے کہ پانی شہر سے نکلنے کا نام ہی نہیں لے رہا،اور یوں کچرے کے ساتھ مل کر پانی نے وہ تعفن اٹھایا ہے کہ بدبو کی وجہ سے بھی کئی لوگوں کو صحت کے مسائل کا سامنا کرنا پڑا ہے۔
اس کے علاوہ بارشوں کی زیادتی کی وجہ سے بجلی کا نظام بھی متاثر ہوا اور درجنوں لوگ موت کے گھاٹ اتر گئے۔نیشنل الیکٹرک پاور ریگولیٹری اتھارٹی (نیپرا) نے کراچی میں مون سون سیزن کے دوران کرنٹ لگنے کے واقعات پر کے الیکٹرک کے خلاف باضابطہ تحقیقات شروع کرنے کا اعلان کردیا۔ اس حوالے سے جاری بیان میں کہا گیا کہ ‘نیپرا کے سینئر افسران کو معاملے کی تحقیقات کے لیے مقرر کیا ہے اور انہیں 15 روز میں اپنی تحقیقات مکمل کرنے کا وقت دیا گیا ہے’۔
گزشتہ ایک ماہ کے دوران کراچی میں بہت زیادہ مون سون کی بارشیں ریکارڈ کی گئی تھیں، جس کے باعث اربن فلڈنگ اور پانی کے جمع ہونے کے باعث شہر کا انفرااسٹرکچر کو بری طرح نقصان پہنچا تھا۔اس کے ساتھ ساتھ کرنٹ لگنے کی وجہ سے بہت سے افراد جان سے گئے تھے جبکہ دیگر واقعات بھی رونما ہوگئے اور شہر کا بڑا حصہ طویل دورانیے تک بجلی سے محروم رہا۔بیان میں کہا گیا کہ ‘یہ تمام حقائق نیپرا کے انتظامی قوانین، ضابطے، معیار اور کے الیکٹرک کی جانب سے دیگر قابل عمل دستاویزات کی ممکنہ خلاف ورزی کی نشاندہی کرتے ہیں ‘۔

یہ بھی پڑھیں

وزیراعظم سے آرمی چیف کی ملاقات، مقبوضہ کشمیر کی صورتحال پر بات چیت

اسلام آباد (میڈیا92نیوز آن لائن) وزیراعظم عمران خان سے آرمی چیف جنرل قمر جاوید باجوہ …